114-Doomsday and life after death by Sultan Bashir Mehmood

Doomsday and life after death by Sultan Bashir Mehmood

قیامت اور حیات بعد الموت از سلطان بشیر محمود

Doomsday and life after deathمصنف: سلطان بشیر محمود

نام ترجمہ: قیامت اور حیات بعد الموت

مترجم: میجر (ر) امیر افضل خان

صنف: نان فکشن، اسلام اور سائنس، تحقیق

صفحات: 570

سن اشاعت: 1987

ناشر: القرآن الحکیم ریسرچ فاؤنڈیشن، اسلام آباد

ڈومز ڈے اینڈ لائف آفٹر ڈیتھ، جس کا اردو ترجمہ “قیامت اور حیات بعد الموت” کے عنوان سے کیا گیا ہے، سلطان بشیر محمود صاحب کی تصنیف ہے۔ بشیر صاحب کا تعارف ہم کتابستان میں پیش کی گئی ان کی ایک اور کتاب کے تعارف کے دوران کروا چکے ہیں۔ اس بلاگ کے آخر میں اس کتاب کا ربط موجود ہے جہاں سے قارئین اس تعارف تک پہنچ سکتے ہیں۔ اس کتاب کے آغاز میں کتاب کے تعارف کے طور پہ درج ہے،

“قرآن حکیم، فرمودات رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اور جدید سائنسی دریافتوں کی روشنی میں تخلیق کائنات، مومن کا فلسفہ حیات، کائنات میں انسان کا مقام اور مقاصد تخلیق، زندگی، موت، جسم، نفس، روح، ملائکہ اور جنات کے حقائق، قیامت عالم قبور،عالم برزخ، آخرت، روز محشر، جزا و سزا، جنت و دوزخ کے حالات یعنی یہ کتاب زمان و مکان میں ابتدا سے انتہا تک انسانی سفر کی داستان پہ ایک حقیقی مدلل اور سائنٹیفک تجزیہ ہے”۔ Continue reading 114-Doomsday and life after death by Sultan Bashir Mehmood

105- Evidence of afterlife: The science of near death experiences by Jeffrey Long, MD with Paul Perry

Evidence of afterlife: The science of near death experiences by Jeffrey Long, MD with Paul Perry

evidence_of_the_afterlifeمصنف: جیفرے لانگ، پال پیری

صنف: نان فکشن، تحقیقی ، سائنسی

صفحات: ۲۳۴

ناشر: ہارپر کولنز ای بکس

سن اشاعت: ۲۰۱۰

موت انسانی زندگی کی ایک اٹل حقیقت ہے۔ اس دنیا میں آنے والی ہر روح کو موت کا ذائقہ چکھنا ہے۔ ہر زندگی اپنی پیدائش سے شروع ہوتی ہے اور موت پہ جا کے اس کا اختتا م ہوتا ہے۔ موت کے بعد کیا ہے؟ یہ ایک ایسا سوال ہے جس کا حتمی جواب کسی کے پاس نہیں، کیونکہ مرنے والا کبھی لوٹ کے واپس نہیں آیا۔ موت کی حقیقت کے بارے میں دنیا کے مختلف عقائد کے ماننے والوں کے مختلف خیالات ہیں۔ کچھ عقائد میں مرنے کے بعد دوسرے جنم کا تصور ہے۔ ان لوگوں کا ماننا ہے کہ مرنے والا ایک نیا جنم لے کے دنیا میں واپس آجاتا ہے۔ اس نئے جنم میں اسے کس طرح کی زندگی ملے گی اس کی بنیاد اس کے گزشتہ جنم میں کئے گئے اعمال پہ ہو گی۔ اور یہ سلسلہ اس روح کے سات جنموں تک چلتا ہے۔ کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ مرنے کے بعد کوئی زندگی نہیں، کوئی نیا جنم نہیں لیا جاتا، یہ دنیا کی زندگی ہی ہے جو سب کچھ ہے، مرنے کے بعد کچھ نہیں۔ تاہم یہ اعتقادات کی باتیں ہیں۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ سائنس بھی اس موضوع میں دلچسپی رکھتی ہے وہ بھی اس سوال کا جواب لگانے کی کوشش کر رہی ہے کہ مرنے کے بعد کیا ہوتا ہے، یا موت کیا ہے، کیا یہ زندگی کا اختتام ہے یا سفر کی ایک منزل کی طرف روانگی ہے۔ کتابستا ن میں آج اسی موضوع کے بارے میں بات کرنے کے لکھی گئی ایک سائنسی تحقیقی کتاب منتخب کی گئی ہے۔ اس کتاب کا اردو عنوان ’حیات بعدالموت کے شواہد‘ ہو سکتا ہے۔ یہ کتاب میڈیکل ڈاکٹر جیفرے لانگ صاحب کی تحریر کردہ ہے اور اس کام میں ان کی مدد پیری پال نے کی ہے۔
کتابستان میں اس موضوع پہ پہلے بھی کچھ کتب پیش کی جا چکی ہیں جن میں موت کی حقیقت مذہبی نقطہ نظر سے پیش کی گئی ہے۔ ان کتب کے عنوانات ہیں:
Continue reading 105- Evidence of afterlife: The science of near death experiences by Jeffrey Long, MD with Paul Perry

086- Digital Fortress by Dan Brown

Digital Fortress by Dan Brown

Digital fortressمصنف: ڈین براؤن

زبان: انگریزی

صنف: ناول، انگریزی ادب

سن اشاعت: 1998

ڈین براؤن کی کتابوں کا پہلے بھی تعارف پیش کیا جا چکا ہے۔ آج ہمارا موضوع جو کتاب ہے وہ ڈین براؤن صاحب کی سب سے پہلی کتاب ہے۔ کتاب کا عنوان ہے “ڈیجیٹل فورٹریس”۔ یہ کتاب 1998 میں شائع ہوئی تھی۔ یہ ایک تھرلر فکشن ناول ہے جس کی خاص بات اس کی تیز رفتاری ہے۔ ڈیجیٹل فورٹریس گرچہ ڈین براؤن کا پہلا ناول ہے تاہم اس کا موضوع یونیک ہے۔ اس میں براؤن نے ای میل اور انٹرنیٹ پہ بھیجے جانے والے پیغامات کی پرائیویسی کے بارے میں سوال اٹھائے ہیں۔ انہوں نے یہ بتایا ہے کہ حکومتیں ہر پیغام کو پڑھتی ہیں۔ اس مقصد کے لئے باقاعدہ الگ ڈیپارٹمنٹ موجود ہے جس کے پاس جدید ترین سہولیات موجود ہیں۔ ناول کی اشاعت کے سولہ سال بعد یعنی 2014 میں ہم یہ بات جانتے ہیں کہ حکومتیں تمام ای میلز، میسیجز کو پڑھتی ہیں یعنی الیکٹرانک گفتگو اور ڈیجیٹل ورلڈ میں کچھ بھی پرائیویسی باقی نہیں، ہر پیغام حکومتی محافظوں کی نظر سے گزرتا ہے۔ حکومتیں جہاں اس معاملے کو سیکیوریٹی کے لئے ضروری قرار دیتی ہیں وہیں ایک عام آدمی کے لئے یہ اس کی ذاتی زندگی میں دخل اندازی کے مترادف ہے اور اسے پورا حق حاصل ہونا چاہئے کہ وہ اپنی معلومات کو کسی بھی دوسرے کی نظروں سے محفوظ رکھ سکے۔ نیز یہ کہ ایک عام آدمی کو علم بھی نہیں کہ اس کی خفیہ نگرانی ہو رہی ہے۔ Continue reading 086- Digital Fortress by Dan Brown

059- اسرار حیات از سید فیاض بخاری

اسرار حیات از سید فیاض بخاری

مصنف: سید اسرار بخاری
صفحات: 238
قیمت: 270 روپے
سن اشاعت: 2003
ناشر: فیض الاسلام پرنٹنگ پریس، راولپنڈی
ISBN: 969.8768

سید فیاض بخاری صاحب کی لکھی ہوئی کتاب اسرار حیات، زندگی کے بھیدوں سے پردہ اٹھاتی ہے۔ مصنف سے ہماری پہلی واقفیت اس کتاب کے ذریعے ہی ہوئی ہے۔ غالباً یہ ان کے قلم سے نکلی ہوئی پہلی کتاب ہے۔ تاہم کتاب کے موضوع سے مصنف کی سنجیدگی اور کائنات کے پراسرار بھیدوں میں ان کی دلچسپی آشکار ہوتی ہے۔ کتاب کے آغاز میں کچھ احباب کی رائے بھی شامل کی گئی ہے اور ان تمام نے مصنف کی اس کاوش کو وقت کی ضرورت قرار دیا ہے۔ Continue reading 059- اسرار حیات از سید فیاض بخاری

051- State of fear by Michael Crichton

State of fear by Michael Crichton

مصنف: مائیکل کریکٹن
زبان: انگریزی
سن اشاعت: 2004

مائیکل کریکٹن انگریزی زبان کے جانے مانے مصنف ہیں۔ آپ کے قلم سے زیادہ تر سائنس فکشن اور تھرلر ناولز نکلے ہیں جنہوں نے بہت زیادہ مقبولیت حاصل کی ہے۔ آپ کے کریڈٹ پہ جراسک پارک جیسے ناول اور فلمیں موجود ہیں۔ آپ کی تحریروں کے موضوعات میں ایکشن اور جدید ترین ٹیکنالوجی لازم ہیں۔ عموماً آپ نے ایسے موضوعات پہ قلم اٹھایا ہے جن میں ٹیکنالوجی اور انسانی نا اہلی کے ملاپ سے ہونے والے حادثات پہ روشنی پڑتی ہے۔

زیر گفتگو ناول اسٹیٹ آف فیئر، جس کا اردو ترجمہ “حالتِ خوف” ہو سکتا ہے کا موضوع گلوبل وارمنگ ہے۔ گلوبل وارمنگ آج کی دنیا کے اہم ترین موضوعات اور مسائل میں سے ایک ہے۔ Continue reading 051- State of fear by Michael Crichton

049- ماہنامہ گلوبل سائنس

ماہنامہ گلوبل سائنس

صفحات: 63
قیمت: 65 روپے

ماہنامہ گلوبل سائنس، کراچی سے شائع ہونے والا ایک سائنسی جریدہ ہے۔ پاکستان میں یہ واحد جریدہ ہے جو مکمل طور پہ سائنسی مضامین پہ مشتمل ہے اور اردو زبان میں شائع ہوتا ہے۔ ہمارے ہمسایہ ملک بھارت میں کچھ سائنسی جرائد ہیں جو اردو زبان میں شائع ہوتے ہیں تاہم وہ پاکستان میں دستیاب نہیں اور انٹر نیٹ پہ بھی موجود نہیں۔ ایسے میں اردو زبان میں ایک سائنسی قحط سا محسوس ہوتا ہے۔ ماہنامہ گلوبل سائنس اسی قحط کو دور کرنے کی ایک کوشش ہے۔ یہ رسالہ کئی سالوں سے ہر ماہ باقاعدگی سے شائع ہو رہا ہے۔ تاہم اس نے کئی گرم اور سرد دور دیکھے ہیں۔ پاکستان میں سائنسی جریدہ شائع کرکے اس سے مالی مفاد حاصل کرنا کسی دیوانے کے خواب سے کم نہیں۔ Continue reading 049- ماہنامہ گلوبل سائنس

033۔ برمودا تکون اور دجال از مولانا عاصم عمر

برمودا تکون اور دجال از مولانا عاصم عمر

مصنف: مولانا عاصم عمر
صفحات: 271
قیمت: 170 روپے
ناشر:الھجرہ پبلیکیشنز، کراچی۔

قرب قیامت کے موضوع میں دلچسپی رکھنے والے قارئین کے لئے مولانا عاصم عمر کا نام نیا نہیں۔ قرب قیامت، دجال، امام مہدی جیسے موضوعات پہ آپ کی کتب منظر عام پہ آ چکی ہیں اور بہت مقبول ہوئی ہیں۔ کتابستان کا آج کا موضوع آپ کی لکھی ہوئی کتاب “برمودا تکون اور دجال” ہے۔

جیسا کہ کتاب کے نام سے ہی واضح ہے یہ کتاب برمودا تکون اور دجال کے مابین تعلق کے بارے میں لکھی گئی ہے۔ برمودا تکون یا برمودا ٹرائی اینگل سے زیادہ تر لوگ واقف ہیں۔ یہ سمندر کے درمیان مثلث نما وہ حصہ ہے جہاں سے گزرنے والے بحری یا ہوائی جہاز کسی انجانے حادثے کا شکار ہو جاتے ہیں Continue reading 033۔ برمودا تکون اور دجال از مولانا عاصم عمر

031۔ کشتِ زربار از پروفیسر احمد رفیق اختر

کشتِ زربار از پروفیسر احمد رفیق اختر

مصنف: پروفیسر احمد اختر رفیق
صفحات: 100

پروفیسر احمد اختر رفیق کا نام کئی لوگوں کے لئے نیا نہیں ہوگا۔ آپ موجودہ دور کے دانشور ہیں۔ دورِ جدید کے علوم کے ساتھ ساتھ آپ نے اللہ کی تلاش کا سفر بھی اختیار کیا۔ آپ کے مطابق قرآن کے الہامی کتاب ہونے کے دعوے کو غلط ثابت کرنے کے لئے اس میں سے محض ایک غلطی نکالنا ہی کافی ہے۔ لیکن آپ اپنی تمام تر کوشش کے باوجود اس میں سے ایک بھی غلطی نہیں نکال سکے۔ پروفیسر صاحب کے بقول اللہ کی تلاش کا سفر قرآن سے ہو کے گزرتا ہے اور یہ ہی وہ واحد الہامی کتاب ہے جو اللہ تک پہنچا سکتی ہے اس کے علاوہ دنیا کے کسی اور مذہب، تعلیمات اور کتاب میں یہ صلاحیت نہیں جو انسان کو اس کے خالقِ حقیقی تک لے جائے۔ پروفیسر صاحب کو کئی لوگ ایک ولی کا درجہ دیتے ہیں۔ Continue reading 031۔ کشتِ زربار از پروفیسر احمد رفیق اختر

024۔ اینجلز اینڈ ڈیمنز (Angels and demons) از ڈین براؤن (Dan Brown)

اینجلز اینڈ ڈیمنز (Angels and demons) از ڈین براؤن (Dan Brown)

مصنف: ڈین براؤن
زبان: انگریزی
صفحات: 500

کتابستان کے آج کے بلاگ کا موضوع ایک اور کتاب تھی لیکن پاپائے روم کے حالیہ استعفیٰ اور اس کے بعد نئے پوپ کے چناؤ کے موقع کی مناسبت سے موجودہ کتاب کا انتخاب کیا گیا ہے۔ کتاب کے موضوع سے قطع نظر اس کتاب میں پوپ کے چناؤ کے طریقہ کار کے بارے میں انتہائی تفصیلی انداز میں بتایا گیا ہے۔ چناؤ کے طریقے سے عیسائی قاری تو یقیناً واقف ہوں گے لیکن دوسرے مذاہب سے تعلق رکھنے والے یا وہ افراد جو اس سے ناواقف ہیں، ان کے لئے یہ کتاب کافی معلوماتی ثابت ہو سکتی ہے۔ اینجلز اینڈ ڈیمنز یعنی “فرشتے اور شیطان” مشہور مصنف ڈین براؤن کا لکھا ہوا ناول ہے جو سن 2000 میں منظر عام پہ آیا اور بیسٹ سیلر ثابت ہوا۔ اس ناول پہ بعد میں ہالی وڈ میں فلم بھی بنائی گئی۔ اینجلز اینڈ ڈیمنز، ڈین براؤن کے رابرٹ لینگڈن (Robert Langdon) سیریز کا پہلا ناول ہے۔ رابرٹ لینگڈن ایک مشہور سمبالوجسٹ symbologist ہے اور اپنے کام میں انتہائی ماہر ہے۔ اس سلسلے کے دو اور ناول بھی منظر عام پہ آ چکے ہیں۔ Continue reading 024۔ اینجلز اینڈ ڈیمنز (Angels and demons) از ڈین براؤن (Dan Brown)

022۔ تلاش حقیقت از سلطان بشیر الدین محمود (ستارہء امتیاز)

تلاش حقیقت از سلطان بشیر الدین محمود (ستارہء امتیاز)

Talaash-e-Haqeeqatصفحات: 176
قیمت: 200 روپے
پبلشر: دارلحکمت انٹرنیشنل، اسلام آباد

سلطان بشیر الدین محمود (ستارہء امتیاز)، پاکستان اٹامک انرجی کمیشن کے سابق ڈائریکٹر جنرل ہیں۔ آپ نامور ایٹمی سائنسدان، انجینئر، موجد اور محقق ہیں۔ زیر نظر کتاب جیسا کہ نام سے ظاہر ہے حقیقت کی تلاش سے متعلق ہے۔ اگر وسیع انداز میں بات کی جائے تو اس کا موضوع اسلام اور سائنس قرار دیا جا سکتا ہے۔ لیکن اگر مخصوص پیرائے میں بات کی جائے تو یہ میٹا فزکس یا مابعد الطبیعات کے موضوع کی مدد سے حقیقت کی تلاش کا سفر ہے۔ اس سفر کے دوران طبیعیات جن نتائج پہ پہنچتی ہے انہی نتائج کی حقیقت کے بارے میں یہ کتاب ہے۔ مصنف کے مطابق یہ تلاش Continue reading 022۔ تلاش حقیقت از سلطان بشیر الدین محمود (ستارہء امتیاز)

015۔ دنیا کے اس پار از مولانا مفتی محمد تقی عثمانی

دنیا کے اس پار از مولانا مفتی محمد تقی عثمانی

صفحات: 38
مصنف: مولانا مفتی محمد تقی عثمانی
پبلشر: ادارہ اسلامیات، لاہور، کراچی

مولانا صاحب کا نام کسی تعارف کا محتاج نہیں ہے۔ دنیا کے اس پار دراصل، مفتی تقی عثمانی صاحب کا ایک مضمون ہے جو مئی 1996 میں روزنامہ جنگ میں تین اقساط میں شائع ہوا۔ اس مضمون کو محفوظ رکھنے کے لئے اب اسے کتابی شکل میں پیش کیا گیا ہے۔ 38 صفحات پہ مشتمل یہ ایک مختصر سا کتابچہ ہے جو ایک ہی نشست میں مکمل کیا جا سکتا ہے۔

“دنیا کے اس پار” سے مراد موت کے بعد کی صورتحال ہے یعنی اس دنیا اورزندگی کی دہلیز سے نکل جانے کے بعد کیا ہونے والا ہے۔ Continue reading 015۔ دنیا کے اس پار از مولانا مفتی محمد تقی عثمانی

009۔21 دسمبر 2012: کائنات قیامت کی دہلیز پر از صاحبزادہ محمد عبدالرشید

21 دسمبر 2012: کائنات قیامت کی دہلیز پر از صاحبزادہ محمد عبدالرشید

صفحات: 275
مصنف: صاحبزادہ محمد عبدالرشید
پبلشر: بک کارنر شو روم، جہلم

“قیامت کب آئے گی؟” یہ ایک ایسا موضوع ہے جس کے بارے میں ہمیشہ سے قیاس آرائیاں جاری ہیں۔ دنیا کے تقریباً ہر مذہب میں دنیا کے اختتام کے بارے میں اشارے موجود ہیں۔ آج سائنس بھی اس نتیجے پہ پہنچی ہے کہ جس طرح اس کائنات کا آغاز ہوا تھا اسی طرح ایک دن یہ اپنے انجام کو بھی پہنچ جائے گی۔ لیکن یہ انجام کب آئے گا اس سوال کا حتمی جواب کسی کے پاس نہیں، اور شاید یہی وجہ ہے کہ اس بارے میں آنے دن نت نئے اندازے اور قیاس آرائیاں سامنے آتی رہتی ہیں۔ Continue reading 009۔21 دسمبر 2012: کائنات قیامت کی دہلیز پر از صاحبزادہ محمد عبدالرشید