130- Inferno by Dan Brown

Inferno by Dan Brown

inferno-dan-brownمصنف:ڈین براؤن

صنف: ناول، انگریزی ادب

صفحات: 461

سن اشاعت: 2013

ISBN: 978-1-845-95067-5

کسی بھی مصنف کی کامیابی کی نشانی یہ ہے کہ اس کی ایک کتاب پڑھنے کے بعد قاری اس کی لکھی دیگر کتب پڑھنے کی خواہش محسوس کرے۔ ایسا ہی ڈین براؤن کے ساتھ بھی ہے۔ ان کا تحریر کردہ ایک ناول پڑھنے کے بعد ان کی دوسری کتابوں کے مطالعے کی تحریک پیدا ہوتی ہے۔ کتابستان میں گاہے بہ گاہے ان کے کام کو پیش کیا جاتا رہا ہے۔ ان کی ابتدائی کتب گرچہ بہت متاثر کن نہیں رہی ہیں لیکن وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ براؤن کے لکھنے کے انداز میں بتدریج بہتری آئی ہے۔ ان کے سسپنس پیش کرنے کا طریقہ بہتر ہوا ہے۔ اینجلز اینڈ ڈیمنز، گرچہ موضوع کے اعتبار سے اک عمدہ اور منفرد ناول تھا، تاہم اس کے مطالعے کے کافی عرصے بعد تک بھی مصنف کی کوئی کتاب زیرِ مطالعہ نہ آ سکی، گرچہ نئے ناول منظر عام پہ آ چکے تھے۔ تاہم “دی لاسٹ سمبل” کا مطالعہ کرتے ہوئے احساس ہوا کہ اس ناول کو مکمل کئے بغیر ہاتھ سے رکھا نہیں جا سکتا۔ اس ناول کے اختتام پہ براؤن کے تازہ ترین ناول کی تلاش شروع ہوئی اور ہاتھ میں انفرنو آ گیا، جو ہمارا آج کا موضوع ہے اور آج کل دی ڈاونشی کوڈ ہمارے زیر مطالعہ ہے۔ امید ہے جلد ہی اس پہ لکھا گیا مضمون  کتابستان کا حصہ بنے گا۔ عمیرا احمد بابا یحییٰ خان کے بعد ڈین براؤن بھی ہماری اس فہرست میں شامل ہو گئے ہیں جن مصنفین کی آنے والی کتب کا ہم بےچینی سے انتظار کرتے ہیں۔

انفرنو، ڈین براؤن کا لکھا ہوا تازہ ترین ناول ہے اور سن 2013 میں شائع ہوا ہے۔ یہ ناول بھی رابرٹ لینگڈن سیریز کا حصہ ہے۔ ناول کا مرکزی خیال لینگڈن سیریز کے باقی حصوں سے مختلف نہیں ہے۔ اس ناول میں بھی مختلف سمبلز یعنی نشانیوں کی مدد سے رابرٹ لینگڈن کو ایک انجان جگہ کے بارے میں سراغ لگانے ہیں۔ اس بار لینگڈن کی خدمات ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن یعنی ڈبلیو ایچ او نے حاصل کی ہیں۔ انہیں ایک جنونی لیکن ذہین سائنسدان کا سامنا ہے جس کے نزدیک دنیا کی بڑھتی ہوئی آبادی ایک کینسر کی طرح ہے اور اس کینسر سے بچاؤ کا حل یہی ہے کہ دنیا کی آبادی کم کی جائے۔ اس مقصد کے لئے اس سائنسدان نے ایک پلیگ ایجاد کیا ہے جو ایک مقررہ تاریخ کو دنیا میں پھیل جائے گا اور آبادی میں کمی لانے کا موجب بنے گا۔ ڈبلیو ایچ او اس پلیگ کو اس کے پھیلنے کی تاریخ سے پہلے تلاش کرکے روکنا چاہتی تھی لیکن بدقسمتی سے انہیں اس جگہ کا علم نہیں تھا جہاں یہ پلیگ رکھا گیا تھا۔ اتفاق سے یہ جنونی سائنسدان مشہور شاعر دانتے کا ایک بہت بڑا فین تھا اور اس نے دانتے کی شاعری میں ایسے نشان اور سراغ چھوڑے جو اس پلیگ کی جگہ تلاش کرنے میں مددگار ہو سکتے تھے اور یہی وہ کام تھا جس کے لئے ڈبلیو ایچ او نے رابرٹ لینگڈن کی خدمات حاصل کی تھیں۔

ناول کا آغاز سست رفتاری سے ہوتا ہے تاہم ہر پلٹتے صفحے کے ساتھ اس کی رفتار تیز ہوتی جاتی ہے اور قاری کب کہانی کی گرفت میں آتا ہے وہ جان ہی نہیں پاتا۔ ناول کی سیٹنگ اٹلی اور ترکی کے پس منظر میں کی گئی ہے۔ جہاں براؤن کے قلم سے اٹلی کی خوبصورت منظر کشی دکھائی دیتی ہے وہیں ترکی کے مذہبی مقامات کی تفصیل دل کھینچ لیتی ہے۔

تھرلر کے شائقین کے لئے یہ ایک ریکمنڈڈ ناول ہے۔

کیا آپ اس تبصرے سے متفق ہیں۔آپ بھی اس کتاب کے بارے میں اپنی رائے دیں۔

اگر آپ نے یہ کتاب پڑھی ہے تو اسے 1 سے 5 ستاروں کے درمیان ریٹ کریں۔

تشریف آوری کے لئے مشکور ہوں۔

اگلے ہفتے سرفراز اے شاہ کی کتاب “ کہے فقیر ” کا تعارف و تبصرہ ملاحظہ کیجئے۔ان شاء اللہ۔

***************

ڈین براؤن کے قلم سے مزید

اینجلز اینڈ ڈیمنز (Angels and demons) از ڈین براؤن (Dan Brown)

ڈیسیپشن پوائنٹ (Deception point) از ڈین براؤن (Dan Brown) (Dan Brown)

Digital Fortress by Dan Brown

The lost symbol by Dan Brown

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s