125-Regency Buck by Georgette Heyer

Regency Buck by Georgette Heyer

Regency Buck by Georgette Heyer

مصنفہ: جیورجٹ ہئر

صنف: ناول، انگریزی ادب

صفحات: 333

سن اشاعت: 1935

ISBN: 0-09-944685-5

انگریز مصنفہ جیورجٹ ہئر کا کتابستان میں ہم پہلے بھی تذکرہ کر چکے ہیں۔ آپ گزشتہ صدی کی مشہور مصنفہ ہیں جو اپنے ناولوں کی وجہ سے مشہور ہوئیں۔ آپ کے ناولوں میں عموماً سو سال قبل کے انگلستان کی عکاسی کی گئی ہے۔ ایک صدی قبل کے انگلستان کے حالات، رسوم و رواج، فیشن اور طور طریقوں کی عمدہ منظر کشی آپ کے ناولوں میں ملتی ہے۔ ان ناولوں کی رومانوی فضا، دلچسپ کہانی اور ایک صدی پرانی تفصیلات ان ناولوں کو وہ مخصوص پہچان دیتے ہیں  جو جورجئیٹ ہئر صاحبہ سے منسوب ہے۔ آج جس ناول پہ بات ہو رہی ہے وہ بھی ان تمام خصوصیات کا حامل ہے۔

“ریجنسی بک” ایک خوبصورت، نوجوان دوشیزہ جوڈتھ ٹریونر کی کہانی ہے۔ جوڈتھ کا ایک بھائی بھی ہے جس کا نام پیرگرین ٹریونر ہے۔ جوڈتھ اور پیرگرین کے والد کی حال ہی میں وفات ہوئی ہے۔ اپنی وفات سے قبل ان کے والد نے اپنی اولاد کی پرورش کی ذمہ داری اپنے ایک دوست “ففتھ ارل آف ورتھ” کے ذمے کر دی تھی۔ ارل لندن میں مقیم تھے جبکہ جوڈتھ اور اس کا بھائی انگلستان کے ایک نواحی علاقے میں رہائش پذیر تھے۔ ارل نے ان کے والد کی وفات کے بعد ان سے رابطہ کیا اور کہا کہ بہتر ہے کہ وہ اپنے نواحی علاقے میں ہی مقیم رہیں۔ لیکن جوڈتھ اپنے بھائی کے ساتھ لندن کے لئے نکل پڑی اور ارل کو اس بارے میں کوئی اطلاع نہیں دی گئی۔ ان کا سفر دلچسپ رہا۔ دوران سفر ان کی ملاقات ایک نوجوان، امیر شخص سے ملاقات ہوئی جو ان دونوں بہن بھائی کو بےحد مغرور اور خود پسند معلوم ہوا۔ ان کے دلوں میں اس شخص کے لئے ناپسندیدگی کے جذبات پیدا ہوئے۔ لندن پہنچنے پہ انہیں علم ہوا کہ ان کے والد کی طرف سے مقرر کیا گیا سرپرست کوئی بڑی عمر کا آدمی نہیں بلکہ وہی خود پسند امیر زادہ ہے جس سے ان کی رستے میں ملاقات ہوئی تھی اور جسے وہ ناپسند کر چکے تھے۔ دوسری طرف ارل کا بھی یہی کہنا تھا کہ کاش یہ ذمہ داری اس پہ نہ ڈالی جاتی۔ بہرحال ارل لندن میں ان  کی رہائش کا انتظام کرتا ہے۔ انہیں لندن کے فیشن ایبل حلقوں میں متعارف کرواتا ہے۔ جلد ہی جوڈتھ لندن کی ممتاز خواتین میں شمار کی جانے لگتی ہے لیکن اس کے اور ارل کے تعلقات سرد مہری کا شکار ہی رہتے ہیں۔ ناول کی کہانی آگے جا کے کیا رخ اختیار کرتی ہے اس کے لئے تو ناول کا مطالعہ ہی کرنا پڑے گا۔ یہ بات بھی ناول کے آخر میں کھلتی ہے کہ آخر ارل، ان بہن بھائی کی ذمہ داری پا کے ناخوش کیوں تھا۔

ناول تقریباً ایک صدی قبل لکھا گیا ہے اس لئے اس کی زبان بھی پرانی ہے جو آج کے قاری کو نامانوس محسوس ہو سکتی ہے۔ ناول میں لندن کی فشن ایبل زندگی، امراء کے روزمرہ کے معمولات و مشغولات اور دلچسپیوں پہ مصنفہ نے تفصیلی روشنی ڈالی ہے۔ اس طرح یہ ناول انگلستان کے امراء کی زندگی کے بارے میں اچھی خاصی معلومات فراہم کرتا ہے۔ ناول کی رومانوی فضاء، ناول کو بوجھل ہونے نہیں دیتی اور قاری انجام پہ ارل اور جوڈتھ کے لئے خوشی محسوس کرتا ہے۔

کیا آپ اس تبصرے سے متفق ہیں۔آپ بھی اس کتاب کے بارے میں اپنی رائے دیں۔

اگر آپ نے یہ کتاب پڑھی ہے تو اسے 1 سے 5 ستاروں کے درمیان ریٹ کریں۔

تشریف آوری کے لئے مشکور ہوں۔

اگلے ہفتے مستنصر حسین تارڑ کی کتاب “نکلے تیری تلاش میں” کا تعارف و تبصرہ ملاحظہ کیجئے۔ان شاء اللہ۔

***************

جیورجٹ ہئر کے قلم سے مزید

April Lady by Georgette Heyer

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s