096-بری عورت کی کتھا از کشور ناہید

بری عورت کی کتھا از کشور ناہید

BURI_AURAT_KI_KATHAنام مصنفہ: کشور ناہید

صنف: سوانح عمری، پاکستانی ادب

صفحات: 174

قیمت: 250 روپے

سن اشاعت: 2008

 ناشر: سنگ میل پبلی کیشنز لاہور

ISBN-10: 969-35-0628-6

ISBN-13: 978-969-35-0628-0

کشور ناہید صاحبہ کا ذکر گزشتہ صفحات پہ پہلے بھی ہو چکا ہے۔ آپ ایک معروف شاعرہ اور دانشور ہیں۔ آپ کی شاعری کے کئی مجموعے منظر عام پہ آ چکے ہیں۔ آپ کے انٹرویو اکثر اخبارات، اور جرائد کی زینت بنتے ہیں۔ آپ نے مختلف بین الاقوامی مضامین کے تراجم بھی کئے ہیں جو گاہے بہ گاہے سامنے آتے رہے ہیں۔

“بری عورت کی کتھا” کشور ناہید کی سوانح حیات ہے۔ عنوان میں بری عورت کا صیغہ کشور نے اپنے خود کے لئے استعمال کیا ہے اور خود کو بری عورت کہا ہے۔ یہ عنوان ایک طنزیہ انداز اپنے اندر سموئے ہوئے ہے، جو ہمارے معاشرے پہ کیا گیا ہے۔ ہماری سوسائٹی کا عام چلن ہے کہ اگر کوئی عورت یا لڑکی خودمختار ہونے کی کوشش کرے، اپنے گھریلو مسائل حل کرنے کے لئے گھر سے باہر قدم نکالے تو اسے خود بخود بری عورت سمجھ لیا جاتا ہے۔ ایسی بری عورتیں ہمارے ارد گرد ہزاروں بلکہ لاکھوں کی تعداد میں پھیلی ہوئی ہیں جنہیں کسی نہ کسی وجہ سے گھر سے باہر قدم نکالنے ہی پڑے ہیں۔ تاہم ایک بری عورت کی زندگی کی حقیقت کیا ہے وہ کن مسائل اور وجوہات سے دوچار ہوتی ہے، آیا اسے کہیں کسی مدد کی ضرورت ہے یا بری عورت قرار دینے کے بعد معاشرے کی ذمہ داریاں ختم ہو جاتی ہیں، اس جیسے اور کئی دیگر سوالوں کے جوابات دینے کی کشور نے کوشش کی ہے۔ اپنی کتھا میں وہ اپنی زندگی کی داستان سنا رہی ہیں جو ان کے بچپن سے شروع ہوتی ہے پھر جوانی، شادی، نوکری اور دیگر ادوار سے گزرتی ہے۔

کتاب کے آخر میں کشور صاحبہ کی کچھ تصاویر بھی شامل ہیں۔ کچھ خطوط، کچھ اخباری مضامین کے حصے اور

آپ کے نکاح کا خطبہ بھی پیش کیا گیا ہے۔

یہ کتاب پاکستان میں خواتین کی زندگی کیسے گزرتی ہیں، ان کے مسائل، ان کی خواہشات، ان کی خوشیاں وغیرہ کے بارے میں جاننے کے لئے اچھی ہے۔ لیکن ان سب سے بڑھ کے یہ کشور ناہید صاحبہ کی جدوجہد کی داستان ہے، جو انہوں نے اپنی تمام زندگی میں کی ہے۔ سوانح عمری پڑھنے کے شوقین افراد کے لئے یہ ایک اچھی کتاب ہے۔

کیا آپ اس تبصرے سے متفق ہیں۔آپ بھی اس کتاب کے بارے میں اپنی رائے دیں۔

اگر آپ نے یہ کتاب پڑھی ہے تو اسے 1 سے 5 ستاروں کے درمیان ریٹ کریں۔

تشریف آوری کے لئے مشکور ہوں۔

اگلے ہفتے تہمینہ درانی کی کتاب “کفر* ” کا تعارف و تبصرہ ملاحظہ کیجئے۔ان شاء اللہ۔

* Blasphemy by Tehmina Durrani

***************

کشور ناہید کے قلم سے مزید

کشور ناہید کی نوٹ بک از کشور ناہید

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s