072- Forty rules of love by Elif Shafak

Forty rules of love by Elif Shafak

Forty rules of loveزبان:انگریزی

مصنفہ: ایلف شفق

ادب: ترکی

ایلف شفق، ایک مشہور ترک خاتون لکھاری ہیں۔ آپ انگریزی اور ترکی دونوں زبانوں میں لکھتی ہیں۔ آپ کے قلم۔ سے کئی ناول نکل چکے ہیں، جنہوں نے بین الاقوامی شہرت حاصل کی ہے، تاہم کتابستان میں آج پہلی بار آپ کے بارے میں بات ہو رہی ہے۔ ہمیں امید ہے کہ ہم آپ کی باقی کتب کو بھی کتابستان کا موضوع بنائیں گے۔ ان شاء اللہ۔

“فورٹی رولز آف لو” کا آسان ترجمہ “محبت کے چالیس اصول” ہو سکتا ہے۔ عنوان سے اندازہ ہوتا ہے کہ شاید یہ “زندگی گزارنے کے بہترین اصول” ٹائپ کی کوئی کتاب ہوگی، لیکن ایسا نہیں ہے یہ ایک طویل ناول ہے۔ بنیادی طور پہ یہ “ایلا” کی کہانی ہے جو ایک یہودی ہاؤس وائف ہے جس کی زندگی بچوں کی دیکھ بھال کرنے اور طرح طرح کے کھانے پکانے میں گزر رہی ہے۔ وہ عنقریب چالیس سال کی ہونے والی ہے لیکن ایک لگی بندھی روٹین کی زندگی گزار رہی ہے۔ اس کی زندگی میں محبت کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے، وہ محبت کو فضول کام سمجھتی ہے، یہی وجہ ہے کہ جب اس کی بیٹی پسند کی شادی کرنے کا اعلان کرتی ہے تو وہ اس کی سختی سے مخالفت کرتی ہے۔

ایلا کی زندگی میں تبدیلی اس وقت آتی ہے جب وہ ایک پبلشنگ کمپنی کے لئے ناول پڑھنے اور اس کا جائزہ لینے کی نوکری کرتی ہے۔ اس کے پاس جو پہلا ناول تجزئے کے لئے آتا ہے وہ فورٹی رولز آف لو تھا۔ یہیں سے ناول کے اندر ایک اور ناول شروع ہوتا ہے۔ فورٹی رولز آف لو دراصل صوفی ازم پہ مبنی ایک کہانی تھی۔ اس میں شمس تبریز اور مولانا روم کی ملاقات اور ان کے درمیان موجود عشق کی داستان بیان کی گئی تھی۔ جو لوگ صوفی ازم اور تاریخ میں دلچسپی رکھتے ہیں وہ یہ بات جانتے ہوں گے کہ حضرت شمس تبریز نے مولانا روم سے ملنے کے قونیہ کا سفر کیا تھا اور وہاں ان کی روحانی تربیت کی تھی۔ حضرت شمس تبریز سے موسوم ایک واقعہ بہت مشہور ہے جس میں انہوں نے مولانا روم کی لائبریری کی تمام کتب کو آگ لگا دی تھی۔

ناول پڑھنے کے دوران ایلا کا رویہ تبدیل ہونا شروع ہو جاتا ہے وہ کتاب کے مصنف سے بنا دیکھے ہی عشق کرنا شروع کر دیتی ہے۔ اسے احساس ہوتا ہے کہ زندگی میں محبت کی ایک جگہ ہے اور یہ کہ انسان محبت کے بنا ادھورا ہے۔ کتاب کے عنوان میں جن چالیس اصولوں کا ذکر کیا گیا ہے یہ اصول حضرت شمس تبریز کے ہیں۔ جس میں انہوں نے زندگی اور محبت کے چالیس اصولوں کو بیان کیا ہے۔ یہ اصول اپنے اندر اتنی گہرائی لئے ہوئے ہیں کہ اگر انسان انہیں صحیح سے سمجھ لے اور ان پہ عمل پیرا ہو جائے تو زندگی جنت بن جائے۔

ناول کا آغاز گرچہ سست رفتاری سے ہوتا ہے لیکن جوں جوں کہانی آگے بڑھتی ہے قاری اس کی گرفت میں آتا جاتا ہے۔ قاری خود کو شمس تبریز کے کردار سے منسلک پاتا ہے اور آخر تک یہی خواہش کرتا ہے کہ ان کے بدخواہ، ان کے خیر خواہوں میں تبدیل ہو جائیں۔ ناول میں مصنفہ نے ایلا کے کردار کی مماثلت مولانا روم کے کردار سے بیان کی ہے جس کی زندگی بھی محبت کے حصول کے بعد تبدیل ہو گئی۔ یہ ایک ایسا ناول ہے جو اپنے پڑھنے والوں کو اپنے سحر میں جکڑ لیتا ہے اور وہ اسے مکمل پڑھے بغیر چھوڑ نہیں سکتے، بلکہ اس کے پڑھنے کے بعد اس کے سحر سے نکل بھی نہیں پاتے۔

نقادوں کے مطابق ایلف کا کام پاؤل کوئیلہو کے کام کی سمت میں ہے اور وہ ان کے نقش قدم پہ ہی چل رہی ہیں۔ ہمیں امید ہے کہ کتابستان کے قاری پاؤلو کوئیلہو کے کام سے واقف ہوں گے۔ ایک خاتون لکھاری کے قلم سے نکلی ہوئی اتنی کامیاب کتاب دیکھ کر جہاں ایک طرف خوشی محسوس ہوتی ہے وہیں یہ خو اہش بھی پیدا ہوتی ہے کہ کاش ہماری خواتین مصنفات بھی اس پائے کا لکھ سکیں جہاں ان کا موازنہ بین الاقوامی مصنفین کے کاموں سے کیا جائے۔ ہماری خواتین مصنفات بھی اپنے روایتی اور محدود موضوعات سے ہٹ کے نئے انداز کے موضوعات پہ تجربے کریں اور انہیں زیر قلم لائیں۔ ہماری مصنفات میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے، بانو قدسیہ، کشور ناہید، عمیرا احمد جیسی مصنفات کا کام کسی معیار سے کم نہیں، لیکن تعداد آٹے میں نمک کے برابر ہے، خواتین مصنفات کی بڑی تعداد چند موضوعات تک ہی محدود ہے۔ ہمیں امید ہے کہ ایک دن ہمارے پاس بھی بین الاقوامی شہرت یافتہ مصنفات موجود ہوں گی۔

کیا آپ اس تبصرے سے متفق ہیں۔آپ بھی اس کتاب کے بارے میں اپنی رائے دیں۔

اگر آپ نے یہ کتاب پڑھی ہے تو اسے 1 سے 5 ستاروں کے درمیان ریٹ کریں۔

تشریف آوری کے لئے مشکور ہوں۔

اگلے ہفتے احمد عقیل روبی کی کتاب “چوتھی دنیا” کا تعارف و تبصرہ ملاحظہ کیجئے۔ان شاء اللہ۔

Advertisements

One thought on “072- Forty rules of love by Elif Shafak”

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s